قُرآنِ کَریم حضرت مہدی کے نِظام کا ہتھیار ہے اور توّھم پرستی مُنافِق کا

جنابعدناناکتارکےاے- نائنٹیویپربراہراستاِنٹرویوکاایکحِصّہ

 

عدناناکتار: ایکطرفتوجیسےکبڑےمُنافِقاِسکشمکشمیںپڑےہوےہیںکہبھوکےلومڑیوںکیطرحہیراپھیریکررہےہیںاوربدحالیپھیلارہےہیں،آپاسلاماورقُرآنِپاککیخِدمتبہتثلیقےسےکررہےہیں۔

اردماردگان: اِنشاءَاللہحضرت،اللہآپکوخوشرکھے۔

عدناناکتار: دینیجماعتوںکومُنافِقوںسےہوشیاررہناچاہیےکیونکہمنافقلوگبہتخطرناکہیں۔یہ اس لیے کہ جن منافقوں نے مسجدِ ضرار کی بنیاد رکھی تھی وہ حضور صلّی اللہ علیہ و سلّم کے مقصد سے چھٹکارا حاصِل کرنا چاہتے تھے۔ وہ، اللہ معاف کرے، حضور صلّی اللہ علیہ و سلّم کی وفات کا اِنتظار کر رہے تھے اور ان سے چھٹکارا حاصل کرنا چاہتے تھے۔ یہ منافق کوشش کر رہے ہیں کہ وہ کچھ دینی امور میں دخل اندازی کریں یا اپنی کچھ ہدایات پیش کریں یا کوئی منصوبہ تیار کریں یا کوئی کھیل کھیلیں یا انہیں زہر دیں یا انہیں پھنسانے کی کوشش کریں یا کسی طریقے سے ان کی موت کا سوچیں، یہ لوگ بھوکے حقیر کُتّوں کی طرح انتظار کر رہے ہیں کہ وہ اُن کے مقاصدسےچھٹکارا حاصل کریں۔ دینی امور کو اس بارے میں بُہت مُحتاط رہنا چاہیے۔ ایسے منافق ہمیشہ اپنے شیخوں کے لیے آفات کی توقُّع رکھتے ہیں تاکہ وہ کسی دن بےاثر ہو جائیں، کسی طریقے سے۔ اللہ ایک آیة میں فرماتا ہے"اور وہ آپ پر مُصیبت کا انتظار کرتے ہیں، اُن پر ہی بُری مُصیبت آے گی"۔ اس کا کیا مطلب بنتا ہے؟، جو منافق ہیں وہ درد میں ہی مریں گے، انشاءاللہ۔ منافق وہ مخلوق ہے جو اللہ کو سب سے ناپسند ہے، وہ بُہت حقیر مخلوق ہے۔ وہ سانپ کی طرح ہیں، انہیں پہچاننا بُہت مُشکِل ہے۔ وہ ور طرح سے چھپتے ہیں، وہ ہر طرح کی شکلوں میں ہو جاتے ہیں۔ وہ بہت چالاک ہیں، بہت مکار ہیں۔ ان کے پاس ہر جگہ، ہر طرح گھسنے کی طاقت ہے۔ ایک منافق توّھم پرستی قُرآن پاک کے خلاف استعمال کرتا ہے، توھم پرستی ان کا ہتھیار ہے۔ وہ کونسا ہتھیار ہے جو حضرت مہدی کا نِظام استعمال کرتا ہے؟، قُرآینِ کريم۔ توھم پرستی منافق کا ہتھیار ہے۔ وہ قرآن کے خلاف اپنے توھمات کے ساتھ جھگڑا کرتے ہیں۔ اس وجہ سے بہت خیال رکھنا چاہیے اور محتاط رہنا چاہیے۔ بدیع الزمان فرماتے ہیں کہ "وہ شیطان کی طرح ہیں کہ ان کے خیالات جو شیطانی ہیں"۔ وہ کہتے ہیں کہ یہ لوگ شیطانی خیالات پر عمل کرتے ہیں ان امور پر کہ اگلےکو ڈنگ ماریں سانپ کی طرح۔ اسی لیے منافقوں کا پتہ لگانا اور انہیں بےاثر بنانا ہر ایک کا کام نہیں۔ ہمیں مُحتاط رہنا چاہیے، اِنشاءَاللہ۔


2011-09-12 10:40:36

About this site | اپنا ہوم پیج بنائیں | Add to favorites | RSS Feed
اس ویب سایئٹ کا حوالہ دے کر، تمام مواد کاپی، پرنٹ اور مفت بانٹا جا سکتا ہے
(c) All publication rights of the personal photos of Mr. Adnan Oktar that are present in our website and in all other Harun Yahya works belong to Global Publication Ltd. Co. They cannot be used or published without prior consent even if used partially.
۲۰۰۴ ہارون یٰحی
page_top